تعارف امیر اہلسنت

تعظیمِ ساداتِ عِظام

           قبلہ شیخِ طریقت، اَمیرِ اَہلسنّت دامت برکاتہم العالیہ عشق ِنبی صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم میں فنا ہیں اور یہ ایک فطری امر ہے کہ جس سے عشق ہوتا ہے اس سے نسبت رکھنے والی ہر چیز سے بھی عشق ہوجاتا ہے ۔محبوب کے گھر سے، اس کے درو دیوار سے ، محبوب کے گلی کوچوں تک سے تعلقِ عقیدت قائم ہوجاتا ہے۔ پھربَھلا جوعشق نبی صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم میں گم ہو وہ آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم کی آ ل اور اَہلِ بیت سے محبت کیوں نہ رکھے گا۔لہٰذا جہاں آپ دامت برکاتہم العالیہ کو مدینہ پاک کے ذرہ ذرہ سے بے پناہ محبت ہے وہیں آپ دامت برکاتہم العالیہ حضراتِ ساداتِ کرام کی تعظیم و توقیر بجالانے میں بھی پیش پیش رہتے ہیں۔ ملاقات کے وقت اگرامیرِ اہلِسنّت دامت برکاتہم العالیہ کو بتادیا جائے کہ یہ سَیِّد صاحب ہیں توبار ہا دیکھا گیا ہے کہ آپ دامت برکاتہم العالیہ نہایت ہی عاجزی سے سَیِّد زادے کا ہاتھ چوم لیا کرتے ہیں۔ساداتِ کِرام کے بچوں سے انتہائی محبت اور شفقت کرنا یہ آپ دامت برکاتہم العالیہ ہی کا طرہ امتیاز ہے۔کبھی کبھی کسی سَیِّد زادہ کو دیکھ کر امام اہلسنّت رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کا یہ شعر جھوم جھوم کر پڑھنے لگتے ہیں۔

تیری نسل پاک میں ہے بچہ بچہ نور کا

تو ہے عین نور تیرا سب گھرانا نور کا

 

عقیدت ِ اعلٰی حضرت رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ

        امیرِ ا َہلسنّت دامت برکاتہم العالیہ اپنے رسالے سیِّدی قطبِ مدینہ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ میں تَحریر فرماتے ہیں :’’الحمدللہ عزوجل !میں بچپن ہی سے امامِ اَہلسنّت، عظیم ُالبَرَکت،


 

 

Index